Advertisements
Want create site? Find Free WordPress Themes and plugins.

تصویر کے کاپی رائٹ
AFP

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے شہر لاہور میں احتجاج کرنے والی تنظیم تحریک لبیک پاکستان نے حکومت سے معاہدے کے بعد اپنے احتجاج کو ختم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ جمعہ کو صوبائی وزیر قانون رانا ثنا اللہ کی قیادت میں حکومتی وفد نے تحریک لبیک کے قائدین سے مذاکرات کیے۔ تحریک لبیک کا دھرنا، حکومت کو جمعے تک مزید ’مہلت‘ خادم رضوی کی گرفتاری: پولیس نے جگہ جگہ اشتہار لگا دیے’خوف کا عالم‘ خادم حسین رضوی معاہدے کے نکات: ایف آئی آرنامہ نگار شہزاد ملک نے بتایا کہ مذاکرات میں ہونے والے معاہدے کے تحت گذشتہ سال اسلام آباد میں دھرنے کے خلاف پولیس ایکشن میں چھ افراد کی ہلاکت پر ایف آئی آر کاٹی گئی ہے۔ یہ ایف آئی آر نامعلوم افراد کے خلاف کاٹی گئی ہے۔واضح رہے کہ خادم حسین رضوی کی قیادت میں اسلام آباد کے علاقے فیض آباد میں دھرنا ختم کرنے کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ کے حکم پر پولیس نے کارروائی کی جس میں چھ افراد ہلاک ہوئے تھے۔معاہدے کے نکات: راجہ ظفرالحق رپورٹاس کے علاوہ حکومت پنجاب نے راجہ ظفر الحق کی رپورٹ کو بھی منظر عام کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ واضح رہے کہ گذشتہ سال اکتوبر کے اوائل میں پاس ہونے والے الیکشن ایکٹ 2017 میں شامل چند ترامیم پر تنازع کھڑا ہوا جسے حکومت نے محض دفتری’غلطی’ قرار دیا لیکن حزب اختلاف کی جماعتوں نے احتجاج کیا اور مطالبہ کیا کہ ذمہ دار افراد کے خلاف جوڈیشل انکوائری کی جائے۔یہ ترامیم احمدیہ جماعت سے متعلق تھیں جنھیں حکومت پاکستان نے 1974 میں ایک آئینی ترمیم کے تحت غیر مسلم قرار دے دیا تھا۔ حزب اختلاف کی جانب سے نشاندہی کے بعد حکومت نے الیکشن ایکٹ میں ان شقوں کو ان کی پرانی شکل میں بحال کر دیا تھا۔اس حوالے سے مسلم لیگ نواز کے رہنما راجہ ظفرالحق نے تحقیق کی اور رپورٹ مرتب کی تھی۔ اس رپورٹ کو ابھی تک منظر عام پر نہیں لایا گیا ہے۔ معاہدے کے نکات: رانا ثنا اللہ بورڈ کے روبرورانا ثنا اللہ کے خلاف توہین مذہب کے معاملے پر تحریک لبیک نے علما پر مبنی ایک بورڈ تشکیل دیا ہے اور صوبائی وزیر قانون رانا ثنا اللہ نے اس معاہدے میں یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ اس بورڈ کے سامنے پیش ہوں گے۔ واضح رہے کہ صوبائی وزیر قانون رانا ثنا اللہ نے احمدی برادری کے حوالے سے ایک بیان دیا تھا۔ اس بیان پر تحریک لبیک نے کہا تھا کہ احمدیوں کی حمایت کر کے رانا ثنا اللہ دائرہ اسلام سے خارج ہو گئے ہیں اور وہ اس بورڈ کے سامنے پیش ہو کر اپنے بیان کی وضاحت کریں۔ تحریک لبیک کا احتجاج

تصویر کے کاپی رائٹ
AFP

جمعرات کو تحریک لبیک پاکستان نے فیض آباد دھرنے کے بعد ہونے والے معاہدے پر عملدرآمد نہ ہونے پر لاہور اور راولپنڈی میں احتجاج شروع کیا جبکہ اسلام آباد میں اس کوشش کو ناکام بنا دیا گیا تھا۔تحریک لبیک پاکستان کے امیر خادم حسین رضوی فیض آباد معاہدے پر عملدرآمد نہ ہونے پر دو اپریل سے لاہور کے داتا دربار کے باہر دھرنے کی قیادت کر رہے تھے۔ان کا مطالبہ تھا کہ فیض آباد میں دھرنے کے بعد ہونے والے معاہدے پر عملدرآمد کرایا جائے جو اس وقت حکومت اور تحریک لبیک کے قائدین کے درمیان طے پایا تھا۔ جمعرات کو تحریک لبیک کے کارکنان نے لاہور کے مختلف علاقوں میں دھرنے دیے جس کے باعث معمولات زندگی متاثر ہوئے۔

Did you find apk for android? You can find new Free Android Games and apps.
Advertisements
0 Comments

Leave a reply

©2018 Cyberian.pk

 
or

Log in with your credentials

or    

Forgot your details?

or

Create Account